جولائی ۲۰۱۹

فہرست مضامین

کتاب نما

| جولائی ۲۰۱۹ | کتا ب نما

The Light of The Qur'an [قرآن کی روشنی میں]، عامرہ احسان۔ ناشر: گوشہ علم و فکر، مکان ۱۹۴، سٹریٹ ۵۲، سیکٹر جی ۱۰/۳، اسلام آباد۔ مجلاتی صفحات:۵۰۸۔ قیمت: درج نہیں۔
یہ سب اللہ تعالیٰ کی توفیق پر منحصر ہے کہ وہ اپنے آخری پیغام کی تعلیم وتدریس کی نعمت کس کو عطا فرماتا ہے۔ پھر کتنے خوش نصیب ہیں وہ لوگ، جو اس مقصد کے لیے نئے نئے تجربے کرتے اور والہانہ انداز سے ہردل کو پیغامِ حق کی جانب موڑنے کی کوشش کرتے ہیں۔ زیرنظر کتاب بھی اسی سمت ایک بامعنی اور باوزن کاوش ہے۔ محترمہ عامرہ احسان نے اس سے قبل گذشتہ دس برسوں کے دوران قرآن کی روشنی کے زیرعنوان ایک تدریسی کتاب، قرآن فہمی کے لیے ترتیب دی تھی، جس میں تمام سورتوں کے مرکزی موضوعات کو اس طرح مرتب کیا تھا کہ آج کے قاری تک، اس کے مانوس ذوقِ مطالعہ کے مطابق تفہیم کرسکے۔
اس کامیاب اور مؤثر تدریسی کتاب کو اب بہت سے اضافوں کے ساتھ انگریزی خواں طبقے کے لیے تیار کیا گیا ہے۔ بالخصوص، اس نسل کے لیے مرتب کیا گیا ہے، جو انگریزی میڈیم تعلیم سے نکلنے کے بعد اُردو سے نابلد اور اُردو میں اعلیٰ درجے کے دینی و علمی اثاثے سے محروم ہوگئی ہے۔ یعقوب انور صاحب نے انگریزی ترجمہ بہت عام فہم اور مؤثر انداز سے کیا ہے۔ موضوعات، زندگی کی گرہوں کو کھولتے ہیں اور پیغامِ ربّانی دل اور ذہن میں اُتارتے ہیں۔ (س م خ)


عزیمت کے راہی (ہفتم)، حافظ محمد ادریس۔ ناشر: ادارہ معارف اسلامی، منصورہ، لاہور۔ فون: ۳۵۴۳۲۴۷۶-۰۴۲۔صفحات: ۳۸۴۔ قیمت: ۴۰۰ روپے۔
انسان عمر طبعی گزار کر دنیا سے رخصت ہوجاتا ہے، مگر اس کی یادیں پس ماندگان کے دلوں میں زندہ و تابندہ رہتی ہیں۔ حافظ محمد ادریس صاحب نے کئی سال پہلے اپنے بزرگوں، عزیزوں اور تحریک ِ اسلامی کے احباب کی یادوں کو قلم بند کرنے کا سلسلہ شروع کیا تھا۔ عزیمت کے راہی کے عنوان سے اس سلسلے کے چھے حصے شائع ہوچکے ہیں، ساتواں حصہ حال ہی میں منظرعام پر آیا ہے۔ اس میں ۲۳مرحومین (خواتین و حضرات) کا ذکر ہے جن میں اخوان المسلمون کے ساتویں مرشدعام الاستاذ محمد مہدی عاکف، مولانا محمد افضل بدر، حسن صہیب مراد، صفدر علی چودھری، مظفراحمد ہاشمی، رانا نذرالرحمان اور مظفروانی شہید جیسے معروف رفتگان کے ساتھ خدابخش کلیار، پروفیسر میاں سعید احمد، ملک محمد شریف، حکیم عبدالوحید سلیمانی، ڈاکٹر ہارون رشیدخان، افتخار فیروز اور عبدالعزیز ہاشمی جیسے نسبتاً کم معروف مرحومین کا تذکرہ بھی شامل ہے۔
اس طرح کا تذکرہ مرتب کرنا خاصا مشکل کام ہے۔ حافظ صاحب نے بڑی محنت، محبت، توجہ اورخاصی کاوش سے مرحومین کے حالات جمع کیے ہیں۔ لیاقت بلوچ صاحب (نائب امیرجماعت) نے بجا طور پر اس کتاب کو اسلامی تحریک کے کارکنان کے لیے’ تحفہ‘قرار دیا ہے۔ ’دعوت و تربیت اور کردار سازی کے لیے‘ بھی زیرنظر تذکرہ نہایت مفید ہے۔(رفیع الدین ہاشمی)


گلدستۂ تربیت، اہتمام: ادارہ فروغِ علم (مسجد مکتب اسکیم) منصورہ، لاہور۔ فون: ۳۵۴۳۲۵۹۲-۰۴۲۔ مجلاتی صفحات، مجلد: ۲۵۶۔ قیمت: ۶۰۰ روپے۔ 
اسلام کا تصورِ تعلیم و تربیت سے رچا ہوا ہے۔ محض اعداد و شمار اور نری معلومات ایک اچھے انسان کی تشکیل میں خام رہتی ہیں وہ لوگ جن کے پیش نظر کوئی مقصد ہوتا ہے، وہ اس بات کا ضرور اہتمام کرتے ہیں کہ انسانِ مطلوب کو ایک نقشۂ کار کے مطابق تیار کرسکیں۔
ادارہ فروغِ علم نے معاشرے کی بالکل عام آبادی میں، اور درحقیقت ناخواندہ بالغان کو اسلامی، سماجی، شہری فہم دینے کے لیے یہ ایک ایسی ’ورک بک‘ تیار کی ہے، جس کو سبقاً سبقاً پڑھ کر،  یا سن کر، بنیادی معلومات تک رسائی ہوجاتی ہے۔ واقعہ یہ ہے کہ اسے عام دینی مدرسے، اسکول اور کالج کے طالب علموں کی تربیت کے لیے بھی ایک مفید ماخذ کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔(س م خ)